Friday, 18 January, 2019
ایرانی پروپیگنڈے کا شبہ: گوگل نے 39 یوٹیوب چینل بند کر دیے

ایرانی پروپیگنڈے کا شبہ: گوگل نے 39 یوٹیوب چینل بند کر دیے

 

واشنگٹن ۔ انٹرنیٹ سرچ انجن گوگل نے کہا ہے کہ اس نے یوٹیوب پر 39 ایسے چینلز کی نشاندہی ہونے کے بعد جن کا تعلق ایرانی حکومت کی سرپرستی میں چلنے والے نشریاتی اداروں سے تھا، انہیں بند کر دیا ہے۔ گوگل کا کہنا ہے کہ 39 یوٹیوب چینلز کے ساتھ ساتھ 6 بلاگر اکاؤنٹ اور 13 گوگل پلس اکاؤنٹ بھی بند کر دیے ہیں۔

گوگل نے اپنی ایک پوسٹ میں کہا ہے کہ ان موضوعات پر ہماری تحقیقات کا سلسلہ جاری ہے اور ہم اپنے نتائج امریکہ اور دوسری جگہوں پر قانون نافذ کرنے والے اداروں اور دیگر متعلقہ حکومتی عناصر سے شیئر کریں گے۔

منگل کے روا فیس بک، ٹوئیٹر اور گوگل نے مشترکہ طور پر سینکڑوں اکاؤنٹس کو بند کر دیا تھا جن کے متعلق یہ شبہ تھا کہ ان کا تعلق مبینہ طور پر ایران کی پراپیگنڈہ پر مبنی کارروائیوں سے ہے۔

گوگل نے انٹیلی جینس معلومات کے حصول کے لیے ایک سائبر سیکیورٹی کمپنی فائر آئی سے رابطہ کیا ہے ۔ گوگل کا کہنا ہے کہ فائر آئی نے حالیہ مہینوں میں حکومتی سرپرستی میں کام کرنے والے اداروں اور افراد کی کوششوں کا کھوج لگایا اور انہیں بلاک کر دیا۔

فائر آئی نے کہا ہے کہ اسے یہ شک گزرا کہ لوگوں کی سوچ پر اثر انداز ہونے والی یہ کارروائیاں بظاہر ایران کے اندر سے کی گئیں اور ان کا ہدف امریکہ، برطانیہ، لاطینی امریکہ اور مشرق وسطیٰ کے علاقے تھے۔ گوگل کی جانب سے فائر آئی کو اپنی مشاورتي کمپنی ظاہر کیے جانے کے بعد اس کے شیئرز میں 10 فی صد اضافہ ہو گیا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کر سکتے ہیں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  44259
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
یوٹیوب نے پاکستانی صارفین کے لیے ایک مخصوص ورژن متعارف کروایا ہے ویب سائٹ کی طرف متعارف کروائے گئے ورژن کے بعد پاکستان میں موجود تقریباً ہر صارف کو ہی یوٹیوب کی ویب سائٹ کھولنے پر لوگو کے ساتھ چھوٹا سا ”PK“ بھی لکھا نظر آ رہا ہے- جبکہ اس سے
یوٹیوب جلد ہی ایک ایسی ایپ متعارف کروانے جا رہا ہے، جو خاص طور پر بچوں کے لیے بنائی گئی ہے۔ اس کے ذریعے والدین انٹرنیٹ کو کنٹرول کر سکیں گے تاکہ بچوں کی فحش مواد تک رسائی نہ ہو۔ فحش اور نامناسب مواد کو ہٹانے کے
سن 2012ء میں پاکستان میں یوٹیوب پر پابندی کے بعد مقامی سطح پر ویڈیو شیئرنگ کی کوئی مؤثر ویب سائٹ موجود نہیں تھی، تاہم ’اسلامی ویڈیوز‘ کے لیے اب مقامی سطح پر ایک ویب سائٹ شروع کی گئی ہے، جو مسلسل مقبول ہو رہی ہے۔

مزید خبریں
تحقیق کے مطابق دہی اور کم چکنائی کے حامل پنیر کے استعمال سے ذیابیطس لاحق

مقبول ترین
حکومت نے پیپلز پارٹی کے چیرمین بلاول بھٹو زرداری اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نکالنے کی منظوری دے دی۔ وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں بلاول
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری بیان کے مطابق آرمی چیف سے زلمے خلیل زاد اور افغانستان میں امریکی فوج کے کمانڈر کی ہونے والی ملاقات میں علاقائی سیکیورٹی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔
لیون میں یونی ورسٹی کی چھت پر دھماکے کے نتیجے میں 3 افراد زخمی ہوگئے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق فرانس کے شہر لیون میں یونی ورسٹی کی چھت پر دھماکے کے بعد آگ لگ گئی جس نے دیکھتے دیکھتے شدت اختیار کرلی۔
چیف جسٹس ثاقب نثار نے اپنے اعزاز میں فل کورٹ ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ جج کی زندگی میں ڈرکی کوئی گنجائش نہیں۔ چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار آج ریٹائر ہورہے ہیں، ان کے اعزاز میں سپریم کورٹ میں ریفرنس

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں