Friday, 14 August, 2020
دبئی میں اڑن ٹیکسی کا پہلا کامیاب تجربہ

دبئی میں اڑن ٹیکسی کا پہلا کامیاب تجربہ

دبئی ۔ دبئی میں دنیا کی پہلی ڈرون ٹیکسی کا کامیاب تجربہ کر لیا گیا ہے جسے دنیا کی پہلی ڈرون ٹیکسی بھی کہا جارہا ہے۔ آئندہ کچھ برسوں میں وہاں فضا میں بھی ٹیکسیاں اڑتی نظر آئیں گی۔ ڈرون ٹیکسی کی رفتار 100 کلومیٹر (یعنی 62 میل) فی گھنٹہ ہے جبکہ یہ 27 منٹ تک پرواز کر سکتی ہے۔ وولو کاپٹر نامی فلائنگ ٹیکسی جرمنی کی ایک کمپنی نے تیار کی ہے اور یہ دو نشستوں والے ہیلی کاپٹر سے مشابہت رکھتی ہے۔

ڈرون ٹیکسی میں 18 پنکھے نصب ہیں اور پہلے تجربے کے دوران  اسے پہلی مرتبہ ریموٹ کنٹرول گائیڈنس سسٹم کے بغیر اڑایا گیا۔ جدید ٹیکنالوجی کو استعمال کرتے ہوئے ڈرون ٹیکسی کو مکمل طور پر محفوظ بنانے کی کوشش کی گئی ہے۔ یہ فی الحال 30 منٹ تک پرواز کرسکتی ہے۔ خرابی کی صورت میں اس میں بیک اپ بیٹری، روٹر اور بہت ہی زیادہ خطرے کے صورت میں دو پیراشوٹ بھی موجود ہیں۔


ڈرون ٹیکسی کے سیفٹی چیک میں بیک اپ بیٹریاں، روٹرز اور ناگہانی صورتحال سے نمٹنے کیلئے پیراشوٹ سسٹم بھی شامل ہے۔ ڈرون ٹیکسی کی رفتار 100 کلومیٹر (یعنی 62 میل) فی گھنٹہ ہے جبکہ یہ 27 منٹ تک پرواز کر سکتی ہے لیکن آزامائش کے دوران ڈرون ٹیکسی نے کامیابی سے 30 منٹ تک مسلسل پرواز کی۔

عمومی طور پر ہیلی کاپٹروں اور جہازوں کے انجن اور پروں کی بہت زیادہ آواز ہوتی ہے لیکن وولوو کاپٹر تیار کرنے والی کمپنی کا کہنا ہے کہ ڈرون ٹیکسی ایک مخصوص فریکوئنسی پر چلتی ہے جس سے شور پیدا نہیں ہوتا۔

کمپنی کے سربراہ فلورین رائٹر کا کہنا ہے کہ وولو کاپٹر ڈرون ٹیکسی کا سفر کرنے کے لئے اسمارٹ فون میں ایک ایپلیکیشن ڈاون لوڈ کرنا ہوگی جس سے آپ ٹیکسی کو بک کر سکیں گے اور یہ صارف کی بتائی ہوئی جگہ پر پہنچ جائے گی۔

ڈرون ٹیکسی جی پی ایس کی مدد سے راستوں کو انتخاب کرتے ہے تاہم کمپنی کا کہنا ہے کہ وہ اس نظام کو مزید بہتر کرنے پر بھی کام کر رہے ہیں۔ کمپنی کے مطابق اس ٹیکسی کا آغاز آئندہ پانچ سالوں میں کر دیا جائے گا۔

دبئی میں اس ڈرون ہیلی کاپٹر کی آزمائش کے موقع پر شیخ ہمدان بن محمد بھی موجود تھے۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  35594
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
ملٹی میڈیا میسجنگ ایپ سنیپ چیٹ کی جانب سے یہ اقدام عدم تشدد کی پالیسی پر عمل پیرا ہوتے ہوئے ٹویٹر انتظامیہ کی تقلید میں اٹھایا گیا ہے۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ایسے بیانات کی تشہیر نہیں ہو سکے گی جس میں نسلی تشدد کو ہوا مل سکے۔
سماجی رابطے کی مقبول ترین ویب سائٹ ’فیس بک‘ نے ویڈیو کانفرنس ایپ ’زوم‘ کے مقابلے میں ’میسنجر رومز‘ فیچر متعارف کرا دیا ہے۔
ایک سائنسی مطالعے کے مطابق پانی کی ضرورت مند نباتات، مٹی کےاندر سے ابلنے والے پانی کی آواز سننے کی صلاحیت رکھتے ہے۔ اسی طرح حشرات الارض کا احساس اور ہوا کی لرزش کو بھی سنتے ہیں۔
سویڈن: کبھی آپ نے سوچا کہ بالخصوص بارش کے بعد مٹی سے خوشبو کیوں آتی ہے؟ جب اس کی وجہ پر غور کیا گیا تو ایک سائنسی راز کا انکشاف بھی ہوا۔ بوئے گِل یعنی بارش کےبعد یا اس سے پہلے مٹی سے اٹھنے والی خوشبو ایک طرح بیکٹیریا اسٹریپٹو مائسس سے پیدا ہوتی ہے لیکن آخر ایسا کیوں ہوتا ہے؟

مقبول ترین
لاک ڈاؤن نے جہاں ہماری زندگی میں معیشت کا پہیہ جام کیا وہیں بہت سارے سبق بھی دے گیا۔ لاک ڈاؤن نہ ہوتا تو ہم شاید اپنی مصروف زندگی میں اتنے مصروف ہو جاتے کہ رشتوں، ناطوں کی اہمیت اور فیملی سسٹم کی خوبصورتی اور چاشنی سے مزید دور ہوتے چلے جاتے۔ وہ جو اک زندگی ہے نا کہ جس میں بیٹا دفتر جا رہا ہے، بیٹی یونیورسٹی جا رہی ہے، سب گھر والے ادھرادھر بکھرے پڑے ہیں۔
قومی اسمبلی سے انسداد دہشتگردی ترمیمی بل 2020 کو کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا، شرکت داری محدود ذمہ داری سمیت پانچ بلز منظور کرلئے گئے۔ تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں انسداد دہشتگردی ترمیمی بل 2020 کو کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا جس میں کمپنیز ترمیمی بل اور نشہ آور اشیا کی روک تھام کا بل بھی شامل ہے۔
وفاقی وزیر برائے مذہبی امور پیر نورالحق قادری نے کہا ہے کہ اسرائیل میں موساد کی ایک خاتون جعلی اکاؤنٹ سے فرقہ وارانہ مواد پھیلا رہی ہے۔ یہ خاتون فرقہ وارانہ موادسوشل میڈیا پربھیج دیتی ہے اورپھر آگے شیعہ اور سنی خود سے اسے پھیلاتے ہیں۔
سعودی عرب کے سابق انٹیلجنس افسر کی شکایت پر واشنگٹن کی ایک امریکی عدالت نے سعودی بن سلمان ولی عہد کو طلب کرلیا ہے۔ سابق سعودی انٹیلی جنس ایجنٹ کو مبینہ طور پر ناکام قاتلانہ حملے میں نشانہ بنایا گیا تھا۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں