Friday, 22 June, 2018
سیمینار: بیت المقدس فلسطین کا دارالحکومت

سیمینار: بیت المقدس فلسطین کا دارالحکومت

اسلام آباد . فلسطین فاونڈیشن کے زیر اہتمام اسلام آباد میں منعقدہ سے افتتاحی خطاب میں فلسطین فاونڈیشن پاکستان کے مرکزی ترجمان صابر ابومریم کا کہنا تھاکہ فلسطینی آج بھی ظالم صہیونیوں کے ٹینکوں کے مقابل ڈٹے ہوئے ہیں۔ 

رہنما مسلم لیگ ن سنیٹر جنرل (ر) عبدالقیوم نے کہا کہ مشرق وسطیٰ میں آج فلسطین فلیش پوائنٹ ہے، پوری دنیا کی نظریں وہاں لگی ہوئی ہیں۔ یہ سرزمین یہودیت، عیسائیت اور مسلمانوں کے لئے اہم اور متبرک ہے۔ دوسری جنگ عظیم میں ہٹلر نے یہودیوں کو مارا اسے سے جب پوچھا گیا کہ انہیں کیوں مارا تو اس نے جواب دیا کہ چند چھوڑ دیئے ہیں، جن کے ذریعے آنے والی دنیا جان سکے گی کہ انہیں کیوں مارا گیا۔

آج اگر فلسطین ظلم کا شکار ہے تو کل کوئی دوسرا ملک بھی ظلم کا شکار ہو سکتا ہے، ضرورت اس امرکی ہے کہ فلسطین و کشمیر کو ہر فورم پر اجاگر کیا جائے.

سینیٹر ستارہ ایازرہنما اے ا ین پی کا کہنا تھا کہ آج مسلم امہ فلسطین کے حق میں آواز اٹھانے میں ناکام رہی ہے، کشمیر و فلسطین میں آج بھی نہتے عوام اپنے حق کے لئے پتھر ہاتھ میں اٹھا کر میدان عمل میں ہیں۔ تمام مسلمان ممالک کو یکجا ہو کر اس اہم مسئلہ کو عالمی فورمز پر اٹھانا چاہیے۔ 
میاں اسلم نائب امیر جماعت اسلامی کا سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اسرئیل غاصب اور ناجائز ریاست ہے انہوں نے امت کے اتحاد پر ضرور دیتے ہوئے کہا کہ عالم اسلام کو یکجا ہو کر بیت المقدس کو صہیونیوں سے آزاد کروانا ہو گا.

سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا کہ قرآنی حکم ہے کہ یہود و نصاریٰ ہمارے دوست نہیں ہو سکتے۔ ظلم ان کا شیوہ ہے، ان کا ساتھ دینے والا بھی ظالم ہے۔ ہمیں یہود و نصاریٰ پر اعتماد نہیں کرناچاہیے، چند مسلمان ریاستوں نے غاصب ریاست کے ساتھ تعلقات قایم کئے ہوئے ہیں جو انتہائی افسوسناک امر ہے، بعض ممالک میں اسرائیلی سفارتخانے موجود ہیں، شام ، یمن ، عراق اور افغانستان کی جنگیں گریٹر مڈل ایسٹ بنانے کی جنگ ہے جس کے درپردہ امریکہ اور اسرائیل کی سازش کارفرما ہے۔ 

نیل و فرات کی باتیں کرنے والا اسرائیل آج دیواریں کھڑی کرکے دفاع پر مجبور ہے، حزب اللہ کی اسرائیل مخالف جنگوں کے بعد غاصب صہیونی ریاست کی ہیبت قصہ پارینہ بن چکی ہے۔ یہ ہمت اور حوصلہ امام خمینی نے امت مسلمہ کو فراہم کیا، امت مسلمہ سے کہا کہ پوری امت ماہ رمضان کے آخری جمعہ کو یوم القدس کے نام پر منانے کی اپیل کی۔ اگر عوام اور رائے عامہ نہ ہوتی تو بہت سے مسلمان ممالک اسرائیل سے تعلقات قائم کرچکے ہوتے ، یہی رائے عامہ مسئلہ فلسطین کو دفن ہونے سے بچا رہی ہے، آج یہ مسئلہ انسانیت کا اہم مسئلہ بن چکا ہے۔

ملی یکجہتی کونسل کے ڈپٹی سیکرٹری ثاقب اکبر کا کہنا تھا کہ مسئلہ فلسطین کے حل کے لئے دو قومی نظریہ کی بات کرنا ایک غلط اقدام ہے، پاکستان کے دفتر خارجہ بانی پاکستان کی دی گئی پالیسی سے انحراف کرنے کی کوشش کی ہے اور اس مسئلے کے حل کے لئے دو قومی نظریہ کی بات کی ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ قائداعظم محمد علی جناح کی دی گئی پالیسی پر عمل کیا جائے، قائد اسرائیل کو ایک غاصب اور ناجائز ریاست سمجھتے تھے۔

پی ٹی آئی کی رہنما عابدہ راجہ کا کہنا تھا کہ فلسطین میں ظلم کے پہاڑ توڑے جارہے ہیں، عورتوں ، بچوں اور بوڑھوں تک کو معاف نہیں کیا جارہا، بکھرے ہوئے مسلمان صرف اپنے گھروں میں بیٹھ کر نوحہ کناں ہیں، دوقومی نظریہ کی بات کرنے والے فلسطین کے ساتھ مخلص نہیں ہیں۔ آج ہمارے حکمران اپنے چند مفادات کی خاطر صہیونیوں کے مقابل گھٹنے ٹیکے ہوئے ہیں۔ آج ضرورت اس امر کی ہے کہ مسلمان ایک ہو جائیں اور ایک طاقت بن کو ظالم صہیونیوں کا مقابلہ کریں۔ 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کر سکتے ہیں۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  26116
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
لبنان کی اسلامی مزاحمتی تنظیم حز ب اللہ کی جانب سے لبنانی تیل وگیس کے ذخائر پر اسرائیلی دعوے کے بعد دی جانے والی دھمکی کچھ زیادہ تیزی سے اسرائیل میں اپنا کام دکھا رہی ہے۔
الیکشن کمیشن آف پاکستان کے مطابق اگلے ماہ مارچ میں ہونے والے سینٹ انتخابات کی 52نشستوں کے لیے 144امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کروا دیے ہیں جس میں پنجاب سے 34، سندھ سے 47، بلوچستان سے 28 اور خیبر پختونخوا سے 34 امیدوار شامل ہیں
تاریخ کے صفحات پر سید الشہداء حضرت امام حسین ؑ کا موقف اور نقطہ نگاہ آج بھی اپنی پوری رعنائیو ں کے ساتھ رقم ہے۔ چنانچہ جب حاکم مدینہ کی طرف سے یزید کی بیعت کے لئے دباؤ ڈالا گیا
کسی بھی تحریک اور جدوجہد کے لئے عمومی طور پر تین عناصر درکار ہوتے ہیں۔ اول یہ کہ تحریک کے آغاز کے وقت حالات کا منظر نامہ کیسا ہے اور کس نوعیت کے مسائل درپیش ہیں؟ دوسرا یہ کہ تحریک کے مقاصد اور اہداف کیا ہیں؟

مزید خبریں
افغانستان میں جنگ کو تیرہ برس گزرگئے اور 2014ء اس جنگ کے باقاعدہ اختتام کا سال ہے۔یہ برس عالمی تاریخ میں خاص اہمیت اختیار کرتاجارہا ہے۔پرائم ٹارگٹس پر مزاحمت کاروں کے حملے اس حقیقت کو واضح کرتے ہیں کہ طالبان آج تیر ہ سال بعد بھی افغانستان میں طاقت ورہیں۔
15 فروری 2014ء کو سندھ حکومت کے زیر انتظام دوہفتوں سے انعقاد پذیر ثقافتی سرگرمیوں کا میلہ ’’ سندھ فیسٹیول ’’ ختم ہوا تو صوبہ کے ایک دور افتادہ ضلع میں ’’ ڈیتھ فیسٹیول ‘‘ کا آغاز ہوچکا تھا۔
صحرائے تھر کی زمین پانی اور بچے دودھ کو ترس گئے، قحط سالی کے باعث بھوک نے انسانی زندگیوں کو نگلنا شروع کردیا ہے، حکومت نے تھرپارکر کو آفت زدہ تو قرار دے دیا مگر متاثرین کیلئے مختص گندم محکمہ خوراک کے گوداموں میں سڑ رہی ہے۔

مقبول ترین
گڈانی میں سمندر میں نہاتے ہوئے ایک ہی خاندان کے 17 افراد ڈوب گئے، جن میں سے 4 خواتین کی لاشیں نکال لی گئیں۔ ریسکیو ذرائع کے مطابق ایک بچے کو بے ہوشی کی حالت میں جبکہ باقی 10 افراد کو صحیح سلامت ریسکیو کرلیا گیا۔
اب اس وقت بھی یہ فیچر استعمال کرسکتے ہیں۔ واضح رہے کہ بی ٹا ٹیسٹ کے لیے ایک نیا واٹس ایپ ورژن 2.18.189 پیش کیا گیا ہے جبکہ وائس کال کا نیا ورژن v2.18.192 ہے۔ اس کا اصل ورژن بعد میں آئے گا اور ابھی ٹیسٹ کے لیے بی ٹا ورژن گوگل پلے اسٹور پر ریلیز کیا گیا ہے۔
گلوبل آئل اینڈ گیس ڈسکوریز ریویو 2017 کی رپورٹ کے مطابق سال 2017 کی تیسری سہ ماہی کے دوران پاکستان نے تیل و گیس کے 2 بڑے ذخائر دریافت کیے ہیں جبکہ سال کے آخری 3 ماہ کے دوران تیل و گیس کے 4 مزید نئے ذخائر دریافت کیے۔
مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج کی فائرنگ سے 4 افراد شہید اور متعدد زخمی ہوگئے۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے ضلع اننت ناگ میں قابض بھارتی فوج نے محاصرہ کیا اور سرچ آپریشن کے دوران رہائشی علاقے میں فائرنگ

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں