Monday, 09 December, 2019
’’مسلمان خود کو سیاسی طور پر مضبوط کریں، خطبہ حج‘‘

’’مسلمان خود کو سیاسی طور پر مضبوط کریں، خطبہ حج‘‘

مکہ مکرمہ ۔ مسجد نمرہ کے امام الشیخ محمد بن حسن نے خطبہ حج میں کہا ہے کہ مسلمان اپنے آپ کو سیاسی طور پر مضبوط کریں۔ الشیخ محمد بن حسن نے مسجد نمرہ سے خطبہ حج دیتے ہوئے کہا کہ نجات کا راستہ صرف اللہ کی رسی کو مضبوطی سے تھامنے میں ہے، قرآن میں فرمایا گیا اللہ کی رسی کو مضبوطی سے تھام لیا جائے اور جدا جدا راستے نہ اختیار کیے جائیں، نبی کریم ﷺ نے مسلم امہ کو ایک جسم کی مانند قرار دیا، مومن اللہ اور اس کے رسول کی اطاعت کریں، ایک دوسرے کیلیے مغفرت کی دعا کریں، نماز قائم کریں اور برائی کو روکیں، اللہ نے انسانوں اور جنات کو اپنی عبادت کیلئے بنایا ہے۔

خطبہ حج میں کہا گیا کہ اسلام دین رحمت ہے، انسان ہو یا جانور، سب سے رحمت کا معاملہ کریں، امت کو چاہیے ایک دوسرے سے شفقت کا معاملہ رکھے اور نفرتیں ختم کرے، رحم دلی سے آپس میں تعاون اور بھائی چارہ قائم کرو، رسول ﷺ نے فرمایا ہے کہ تم زمین والوں پر رحم کرو اللہ تم پر رحم فرمائے گا، اپنے والدین کے ساتھ بھلائی کا راستہ اختیار کریں، والدین کے بعد دیگر رشتے داروں سے اچھا رویہ اختیار کریں۔

الشیخ محمد بن حسن نے کہا کہ مسلمان نماز قائم کریں اور اللہ کے راستے پر مضبوطی سے چلیں، اہل ایمان کو تقویٰ کا راستہ اختیار کرنا چاہیے، مسلمان اپنے آپ کو سیاسی طور پر مضبوط کریں، اللہ کی توحید اور وحدانیت کو مضبوطی سے پکڑنا چاہیے، مخلوق کو پیدا کرنے کا مقصد ہے اللہ کی عبادت کی جائے، جو اللہ سے ڈرتا ہے اللہ اسے دنیا و آخرت کے خوف سے نجات دلاتا ہے۔

خطبہ حج میں کہا گیا کہ اللہ کی رحمت بہت وسیع ہے، کائنات پر غور سے اللہ کی وحدانیت پر پختہ ایمان پیدا ہوتا ہے، اے عقل والو اللہ کی کائنات اور اس نظام پر بار بار غور کرو، امت مسلمہ نفرتوں کو مٹادے، نیکی میں تعاون کرے، امت مسلمہ میں جس قدر محبت ہوگی اسی قدر امن ہوگا، جو اپنے نفس کا تزکیہ کرتا ہے اللہ اسے پاکی عطا کرتا ہے، یہ ایام تشریق ہیں، ان ایام میں کثرت سے اللہ کا ذکر کرنا چاہیے،  اللہ تعالیٰ امت مسلمہ میں اتحاد و یگانگت پیدا فرمادے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کر سکتے ہیں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  91164
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
اسرائیلی جیلوں میں قید فلسطینیوں کو گرم کپڑے فراہم کرنے کی کوشش کی گئی مگرقابض جیل انتظامیہ نے اسیران کے لواحقین کو اسیران تک گرم کپڑے اور دیگر ضروریات کی فراہمی پر پابندی عاید کردی۔
امریکا کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کیے جانے کے اعلان کی 57 اسلامی ممالک کے وزرائے خارجہ نے شدید مذمت کی ہے۔ اجلاس میں پر مشترکہ قرارداد منظور کی جائے گیا۔
سعودی شاہی خاندان کے رکن اور شہزادہ ترکی بن محمد کے اپنے چچا شہزادہ عبد العزیز بن فہد کی موت کے چند گھنٹوں بعد سعودی عرب کے روایتی حریف ملک ایران فرار ہو نے کا دعویٰ سامنے آیا ہے ۔ شہزادہ ترکی بن محمد نے ایران سے سیاسی پناہ بھی مانگی ہے جو انہیں فراہم کردی گئی ہے ۔
سی آئی اے کی جانب سے جارہ کردہ القاعدہ کے بانی رہنما اسامہ بن لادن کے کمپاؤنڈ میں کیے جانے والے آپریشن کے دوران قبضے میں لی گئی دستاویز پر اب ایران کا رد عمل سامنے آیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ امریکی خفیہ ایجنسی جعلی خبریں پھیلارہی ہے۔

مزید خبریں
مسجد اقصیٰ کے امام وخطیب الشیخ اسماعیل نواھضہ نے برما میں مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کی شدید مذمت کی اور عالم اسلام پر زور دیا کہ وہ روہنگیا مسلمانوں کو ریاستی جبر وتشدد سے نجات دلانے کے لیے موثر اقدامات کریں

مقبول ترین
نئے چیف الیکشن کمشنر کی تعیناتی کے معاملے پر قائد حزب اختلاف اور مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کا کہنا ہے کہ کوشش ہو گی کہ حکومت سے پُر خلوص بات چیت کی جائے۔ اِس وقت شہباز شریف اپنے بھائی اور سابق وزیراعظم نواز شریف کی
آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ لاہور پہنچے ہیں۔ انہوں نے داتا دربارؒ پر حاضری دی، مزار پر چادر چڑھائی اور فاتحہ خوانی کی۔ اس موقع پر ملکی ترقی و خوشحالی اور سلامتی کیلئے دعائیں بھی مانگی گئیں۔
لاہور میں میڈیا نمائندوں سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ سپریم ہے، قانون سازی کا اختیار رکھتی ہے۔ سپریم کورٹ کے تفصیلی فیصلے کے بعد فیصلہ کیا جائے گا کہ ریویو میں جانا ہے یا قانون بنانا ہے؟
جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی-ف) کے امیر مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ آئین کی حکمرانی کے لیے جو قدم اٹھایا وہ منزل پر پہنچ رہا ہے اور حکمرانوں کی کشتی ڈوبنے کے قریب پہنچ گئی ہے۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں