Saturday, 25 November, 2017
نواز شریف کی نااہلی کا فیصلہ متفقہ تھا، سپریم کورٹ

نواز شریف کی نااہلی کا فیصلہ متفقہ تھا، سپریم کورٹ

اسلام آباد ۔ سپریم کورٹ میں پاناما کیس کے فیصلے پر نظر ثانی اپیلوں کی سماعت میں جسٹس آصف کھوسہ نے کہا کہ دونوں فیصلوں میں نواز شریف کو نااہل کیا گیا جبکہ ، جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس دیے جے آئی ٹی رپورٹ کی تعریف کی تھی لیکن ٹرائل کورٹ میں اسکروٹنی ہوگی ۔

سپریم کورٹ میں پاناما کیس کے فیصلے پر نواز شریف اور ان کے بچوں کی نظر ثانی اپیلوں کی سماعت جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں 5 رکنی لارجر بنچ کر رہا ہے، جس میں جسٹس گلزاراحمد ، جسٹس اعجاز افضل خان جسٹس عظمت سعید اور جسٹس اعجاز الاحسن شامل ہیں۔

جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس دیے کہ تحقیقات کا جائزہ لیا جاسکتاہے ، آپ کے پاس موقع ہوگا گواہان اور جے آئی ٹی ارکان سے جرح کرسکیں ۔

سابق وزیراعظم نواز شریف کی جانب سے ان کے وکیل خواجہ حارث اور حسن، حسین اور مریم نواز کی جانب سے سلمان اکرم راجا ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے۔

خواجہ حارث نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پانچ رکنی بنچ نے جو حتمی حکم دیا وہ بنچ صحیح نہیں بنایا گیا، 20اپریل کے فیصلے کو حتمی فیصلے کا حصہ بھی نہیں بنایا گیا، فیصلے دینے والے دو ججز پاناما عملدر آمد بنچ میں نہیں بیٹھ سکتے تھے کیونکہ دو معزز ممبران پہلے فیصلہ دے چکے تھے۔

جسٹس اعجازالاحسن نے استفسار کیا کہ دوججوں کا 20 اپریل کا فیصلہ آپ نے کہیں چیلنج نہیں کیا، جس پرخواجہ حارث نے کہا کہ دو ججوں کے فیصلے کی قانونی حیثیت نہیں تھی اکثریتی فیصلے کو تسلیم کیا گیا تھا اس لئے چیلنج نہیں کیا۔

نواز شریف کے وکیل نے سوال اٹھایا کہ نگراں جج کے ہوتے ہوئے شفاف ٹرائل کیسے ہوگا، مانیٹرنگ جج لگانے کی کوئی مثال نہیں ملتی، جب کہ ریفرنس کا معاملہ اپیل میں سپریم کورٹ میں ہی آنا ہے۔

خواجہ حارث نے کہا کہ عدالت نے جے آئی ٹی ارکان کے فیصلے میں تعریفیں بھی کیں اور اس معاملے میں سپریم کورٹ شکایت کنندہ بن گئی ہے جس پر جسٹس عظمت سعید نے خواجہ حارث کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ تعریفیں تو ہم نے آپ کی بھی کافی کی ہیں جس پر خواجہ حارث نے کہا کہ میری تعریف بے شک فیصلے میں حذف کردیں۔

واضح رہےسپریم کورٹ نے 28 جولائی کو پاناما کیس کے فیصلے میں سابق وزیراعظم نواز شریف کو نااہل قرار دیتے ہوئے نیب کو نواز شریف، ان کے بچوں اور اسحاق ڈار کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کے احکامات جاری کئے تھے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز سپریم کورٹ نے شریف خاندان کی استدعا منظور کرتے ہوئے پاناما لیکس فیصلے کے خلاف نظر ثانی درخواستوں پر پانچ رکنی بنچ تشکیل دیا تھا۔ بنچ کی سربراہی جسٹس آصف سعید کھوسہ کررہے ہیں

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  96739
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
سپریم کورٹ نے فیض آباد انٹرچینج پر مذہبی جماعت کے دھرنے پر گزشتہ روز کی گئی سماعت کا تحریری حکم جاری کردیا ہے ۔ سپریم کورٹ کے دو رکنی بینچ میں شامل جسٹس مشیر عالم اور جسٹس فائز عیسیٰ کی جانب سے تحریری حکم نامہ جاری کیا گیا ہے۔ حکم نامے میں بتایا گیا
سپریم کورٹ نے عدالتی حکم کے باوجود ڈاکٹرعاصم کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نہ نکالنے پر سیکرٹری داخلہ کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کردیا ہے جبکہ کیس کی مزید سماعت آئندہ منگل تک کیلئے ملتوی کردی ہے۔
ڈیرہ اسماعیل خان میں دہشتگردوں کے خلاف کارروائی کے دوران شہید ہونے والے پاک فوج کے بہادر سپوت میجراسحاق کو مکمل فوجی اعزاز کے ساتھ کیولری گراونڈ قبرستان میں سپرد خاک کردیا گیا ہے۔شہید کی نماز جنازہ لاہور کے ایوب اسٹیڈیم میں ادا کی گئی۔
دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر فیصل نے کہا ہےکہ پاکستان کے خلاف دہشتگردی میں بھارتی خفیہ ایجنسی ’را‘ کے افغانستان سے روابط کے ثبوت موجود ہیں۔ کپواڑہ اور دیگرعلاقوں میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور بھارت کے نہتے کشمیریوں پر مظالم کی شدید مذمت کرتے ہیں۔

مزید خبریں
وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف پورے عزم سے لڑ رہے ہیں ، دہشت گردوں کا نیٹ ورک توڑ دیا ہے ، آخری دہشت گرد کے خاتمے تک جنگ لڑیں گے۔ وزیر اعظم نواز شریف سے پشاور میں مسلم لیگ ن کے سینیٹرز اور ارکان قومی
سابق گورنر پنجاب چوہدری محمد سرورنے تحریک انصاف میں باضابطہ طور پر شامل ہونےکی تصدیق کردی ہے۔ ایک نجی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے چوہدری سرور کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف جمہوریت پسند جماعت ہے اس لئے اس میں شامل ہونے کا
ترجمان دفتر خارجہ تسنیم اسلم نےافغان حکام کی جانب سے لگائے جانے والے ان الزامات کو سختی کے ساتھ مسترد کردیا ہے، جن میں کہا گیا تھا کہ سول کپڑوں میں ملبوس پاکستانی فوجی دستے افغان صوبے کنڑ میں حملے کر رہے ہیں۔ ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ افغان حکام کے بے بنیاد اور من گھڑت الزامات سے
سردارمہتاب احمد خان نے خیبرپختونخواکے نئے گورنرکی حیثیت سے اپنے عہدے کاحلف اٹھالیا ہے جنہوں نے قبائلی علاقوں میں قیام امن ، سماجی واقتصادی ترقی اوربحالی وتعمیرنو کواپنی ترجیحات قراردیا ہے۔

مقبول ترین
اسلام آباد انتظامیہ کی جانب سے دھرنے کے شرکاء کو دی گئی 12 بجے کی ڈیڈ لائن ختم ہوگئی ہے تاہم فیض آباد کے مقام پر مظاہرین کی جانب سے دھرنا جاری ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ انتظامیہ ڈیڈ لائن میں اضافہ کردیا ہے اور کہا ہے
دہشت گردی کے خلاف جنگ کے لیے سعودی عرب کی سربراہی میں قائم اسلامی ممالک کی افواج کے اتحاد کی سرکاری ویب سائٹ متعارف کرا دی گئی ہے۔ دہشت گردی مخالف اسلامی فوجی اتحاد‎ (آئی ایم سی ٹی سی) کی ویب
سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کا کہنا ہے کہ کرپشن کے خلاف سعودی عرب میں ہونے والی حالیہ کارروائی کو تخت حاصل کرنے کی کوشش قرار دینا مضحکہ خیز ہے۔ انہوں نے ایران کے رہبرِ اعلیٰ آیت اللہ خامنہ ای کے بارے میں
اسلام آباد انتظامیہ نے دھرنے کے شرکا کو آج رات 12 بجے تک فیض آباد خالی کرنے کی وارننگ جاری کردی جب کہ حکم پر عملدرآمد نہ ہونے کی صورت میں آپریشن کا عندیہ دیا گیا ہے۔ انتظامیہ کا کہنا ہے کہ آپریشن کی تمام ذمہ

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں