Wednesday, 23 September, 2020
فرانس میں چین سے قبل کورونا شروع ہونے کا انکشاف

فرانس میں چین سے قبل کورونا شروع ہونے کا انکشاف
فائل فوٹو

فرانس: فرانس میں چین سے قبل ہی کورونا شروع ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ فرانس میں کورونا کا پہلا کیس 27 دسمبر کو سامنے آیا۔ ڈاکٹر کے مطابق انہیں یقین ہے کہ انہوں نے جن مریضوں کو دیکھا انہیں کورونا ہی تھا تاہم اس وقت ماہرین کو اس بیماری کا علم نہیں تھا۔

تفصیلات کے مطابق عام طور پر یہ تاثر ہے کہ کورونا وائرس سب سے پہلے چین کے شہر ووہان میں دسمبر 2019 کے وسط میں شروع ہوا۔تاہم بعد میں چینی حکام کی جانب سے کی جانے والی تفتیش میں یہ بات سامنے آئی کہ کورونا کی بیماری چین میں دسمبر میں نہیں بلکہ ممکنہ طور پر 17 نومبر 2019 کو سامنے آئی۔

لیکن زیادہ تر ماہرین اور چینی حکام کا بھی خیال ہے کہ چین میں کورونا وائرس کا اصل آغاز 31 دسمبر 2019 کے بعد ہوا۔یورپی ملک فرانس کے ڈاکٹر کی جانب سے انکشاف کیا گیا ہے کہ ممکنہ طور پر کورونا وائرس کی بیماری چین سے قبل ہی فرانس میں شروع ہو چکی تھی یا پھر فرانس میں بھی اس وقت جس وقت چین میں شروع ہوئی۔

ریڈیو فرانس انٹرنیشنل کے مطابق فرانس کے دارالحکومت پیرس کے نواحی علاقے سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر نے دعوی کیا ہے کہ ممکنہ طور پر فرانس میں کورونا وائرس دسمبر2019 میں ہی شروع ہوچکا تھا۔

فرانس نے جنوری 2020ء کے آخر میں اپنے ہاں پہلے کورونا وائرس کی تصدیق کی تھی ،فرانس وہ پہلا یورپی ملک بنا تھا جہاں کورونا کی تصدیق کی گئی جبکہ فرانس ہی یورپ کا وہ پہلا ملک تھا جہاں کورونا کے باعث پہلی موت 15 فروری کو ہوئی۔

ہلاک ہونے والے شخص نے بیماری میں مبتلا ہونے سے قبل چینی شہر ووہان کا دورہ کیا تھا لیکن اب ایک فرانسیسی ڈاکٹر نے دعویٰ کیا ہے کہ دراصل وہاں پر کرونا وائرس دسمبر2019 میں ہی شروع ہوچکا تھا۔

ڈاکٹر یویس کوہن میں دعویٰ کیا ہے کہ ان کی تفتیش کے مطابق فرانس میں کورونا کا پہلا کیس 27 دسمبر کو سامنے آیا، یعنی کے چین کے کورونا کی 30 دسمبر کو تصدیق کیے جانے سے بھی تین دن قبل سامنے آیا۔

ان کا مزید کہنا ہے کہ انہوں نے اپنی ٹیم کے دیگر ارکان کے ساتھ دو مختلف اسپتالوں میں 24 ایسے مریضوں کا معائنہ کیا جن میں ایسی علامات تھیں جنہیں بعد میں کورونا کی علامات کہا گیا۔

ان مریضوں میں اس وقت بے نام بیماری کی تصدیق 27 دسمبر کو ہوئی تھی تھی۔ ڈاکٹر کے مطابق انہیں یقین ہے کہ انہوں نے جن مریضوں کو دیکھا انہیں کورونا ہی تھا تاہم اس وقت ماہرین کو اس بیماری کا علم نہیں تھا جس کی وجہ سے ان میں مرض کی تصدیق نہیں ہوسکی۔

فرانسیسی ڈاکٹر کی جانب سے یہ دعویٰ اس وقت سامنے آیا ہے جب ہانگ کانگ کی ایک یونیورسٹی کے ماہرین کی جانب سے تحقیق میں انکشاف کیا گیا کہ فرانس میں کورونا کسی دوسرے ملک سے نہیں آیا۔

ریڈیو فرانس انٹرنیشنل کی ایک رپورٹ کے مطابق ہانگ کانگ کی ایک یونیورسٹی کی جانب سے کی جانے والی ایک تحقیق میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ فرانس میں کورونا وائرس مقامی سطح پر شروع ہوا۔

رپورٹ کے مطابق یونیورسٹی کی 16 سالہ تحقیقاتی رپورٹ میں کہا ہے کہ ممکنہ طور پر فرانس میں مقامی سطح پر ہی کورونا وائرس شروع ہوا اور پھیلا ہو اور وہاں پر چین سے کورونا منتقل نہیں ہوا ہوگا۔

خیال رہے کہ فرانس میں بھی کورونا تیزی سے پھیل رہا ہے اور 4 مئی کی شام تک وہاں مریضوں کی تعداد بڑھ کر ایک لاکھ 69 ہزار جب کہ ہلاکتوں کی تعداد25 ہزار کے قریب جا پہنچی تھی۔

دنیا بھر میں 4 مئی کی شام تک کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 35 لاکھ سے زائد جب کہ ہلاکتوں کی تعداد 2 لاکھ 48 ہزار تک جا پہنچی تھی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کر سکتے ہیں۔ ادارہ

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  34134
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
انسانی حقوق کے رہنما ال شارپٹن نے جارج فلائیڈ کی یادگاری تقریب سے خطاب میں کہا کہ اپنے گھٹنے سیاہ فاموں کی گردنوں سے ہٹاؤ۔ تبدیلی آنے تک احتجاج جاری رہے گا۔
سابق امریکی صدر براک اوباما نے امریکا میں پولیس کے ہاتھوں سیاہ فام شہری کی ہلاکت کے معاملے پر اپنا ردعمل دیتے ہوئے ایک بیان میں کہا کہ جارج فلائیڈ کی موت نے امریکا میں منظم نسلی امتیاز کو نمایاں کیا ہے۔
عالمی ادارہ صحت نے کورونا وائرس کے علاج کیلئے ہائیڈروکسی کلوروکوئین کو دوبارہ مفید قرار دے دیا البتہ ایک بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ابھی تک ایسی کوئی دوا سامنے نہیں آئی جس کی مدد سے کرونا کی وبا کا شکار ہونے والے افراد کی جانیں بچائی جا سکیں۔
امریکی جرنیلوں نے صدر ٹرمپ کے کہنے پر فوج کو مظاہرین کے خلاف استعمال کرنے سے انکار کر دیا ہے۔امریکی صدر ٹرمپ اپنے موقف سے پسپا ہونے پر مجبور ہوگئے، واشنگٹن کے باہر تعینات فوجی واپس شمالی کیرولائنا بھیج دیے گئے۔

مزید خبریں
چینی دفترخارجہ کے ترجمان گینگ شوانگ نے ہفتہ وار پریس کانفرنس کے دوران سوالوں کے جوابات دیتے ہوئے کہا کہ مسئلہ کشمیر ایک تاریخی مسئلہ ہے جسے اقوام متحدہ کے چارٹر اور سلامتی کونسل کی متعلقہ قراردادوں کی روشنی میں پر امن طریقے

مقبول ترین
انسداد دہشت گردی عدالت نے سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس کے مجرموں رحمان بھولا اور زبیر چریا کو 264 ، 264 بار سزائے موت سنادی ہے۔ انسداد دہشت گردی عدالت میں سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس کی سماعت ہوئی جس میں رحمان بولا، زبیر چریا اور رؤف صدیقی
ایران نے کہا ہے کہ امریکا نے روایتی غنڈہ گردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے یک طرفہ طور پر اقوام متحدہ کی پابندیاں بحال کیں جس پر اُسے فیصلہ کن جواب دینے کا وعدہ کرتے ہیں۔ عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق صدر حسن روحانی نے ایران پر اقوام متحدہ کی پابندیوں
وزیراعظم نے کہا ہے کہ اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) ریاستی اداروں کو بدنام کرنے کی کوشش تھی، عدالتوں اور فوج کو بدنام نہیں ہونے دیں گے۔ پاکستان کی مسلح افواج قومی سلامتی کی ضامن ہیں۔ ن لیگ نے ایک بار پھر بھارتی ایجنڈے کو فروغ دیا۔
عسکری قیادت نے واضح کیا ہے کہ پاک فوج کا ملک میں کسی بھی سیاسی عمل سے براہ راست یا بالواسطہ تعلق نہیں ہے۔ میڈیا کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اور ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کی پارلیمانی رہنماؤں سے

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں