Monday, 24 September, 2018
5 عالمی طاقتوں کا ایران جوہری معاہدے کی حمایت کا اعلان

5 عالمی طاقتوں کا ایران جوہری معاہدے کی حمایت کا اعلان

آسٹریا . برطانیہ، فرانس، جرمی سمیت روس اور چین نے ایران کو یقین دہانی کرائی ہے کہ امریکا کی جانب سے ایران جوہری معاہدے 2015 سے دستبردار کے باوجود تہران کو معاہدے کے تحت اقتصادی فوائد حاصل رہیں گے۔

ڈان اخبار میں شائع رپورٹ کے مطابق اس حوالے سے چاروں عالمی طاقتوں نے عزم کا اظہار کیا کہ معاہدہ کی رو سے ایران کے ساتھ تجارتی تعلقات سمیت ایرانی تیل اور گیس کی برآمدگی سمیت دیگر توانائی سے متعلق امور پر بھرپور تعاون جاری رہے گا۔

واضح رہے کہ امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ نے اپنے اتحادی ممالک کی تجاویز اور مشوروں کو رد کرتے ہوئے 8 مئی کو ایران کے ساتھ عالمی جوہری معاہدہ منسوخ کردیا تھا جو سابق امریکی صدر باراک اوباما کے دور حکومت میں 2015 میں دیگر عالمی طاقتوں کے چرمیان طے پایا تھا، جس میں برطانیہ، چین، فرانس، جرمنی، روس اور امریکا شامل تھے۔

ایرانی نیوز ایجنسی آئی آر این اے نے 4 جولائی کو کہا تھا کہ تہران اور ماسکو کی جانب سے بیان سامنے آیا ہے کہ ایران اور دیگر 5 ممالک کے وزراء خارجہ آسٹریا میں متنازع جوہری معاہدے 2015 کے حوالے سے ملاقات کریں گے۔

اس حوالے سے بتایا گیا تھا کہ رواں برس امریکا کی جانب سے جوہری معاہدہ منسوخ ہونے کے بعد یہ پہلی ملاقات ہو گی جس میں برطانیہ، چین، فرانس، جرمنی اور روس کے سفیر آسٹریا کے شہر وینا میں ایرانی وزیرخارجہ محمد جاوید طریف سے تبادلہ خیال کریں گے۔

دوسری جانب وینا میں ایرانی وزیر خارجہ محمد جاوید طریف نے کہا کہ ’امریکا کے صدر ڈونلڈٹرمپ کی جانب سے جوہری معاہدے سے دستبردار ہونے کے 2 ماہ بعد دیگر عالمی طاقتوں نے واشنگٹن کے دباؤ ’برداشت‘ کیا جو یقیناً قابل ستائش بات ہے۔

فارس نیوز ایجنسی کی جانب سے نشر کی جانے والی پریس کانفرنس میں ایرانی سفیر نے واضح کیا کہ ’تین اتحادیوں سمیت تمام شرکاء نے سیاسی عزم کا اظہار کیا ہے کہ وہ امریکا کے دباؤ کا برداشت کریں گے اور معاہدے کو روبہ عمل بنائیں گے‘۔

دوسری جانب ایران کے صدر حسن روحانی نے امریکا کی جانب سے ایرانی تیل کی ترسیل روکنے کی کوشش کو ’ناکام خیال‘ قرار دیا اور اس اقدام کو امریکی ’سامراجی پالیسی قرار دیتے ہوئے عالمی قوانین کے منافی‘ کہا تھا ۔

اس حوالے سے وزیرخارجہ نے مزید بتایا کہ 11 نکاتی مشترکہ مقاصد پر آمادگی کا اظہار کیاگیا۔ مشترکہ اعلامیے میں کہا گیا کہ طریف سمیت دیگر مملک کے سفیروں نے معاہدے سے متعلق عزم کا اظہار کیا کہ ایران کے لیے ’اقتصادی حصہ‘ جاری کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ ٹرمپ انتظامیہ کی جانب سے ایرانی جوہری معاہدے سے دستبراری کے باعث تہران کو سخت اقتصادی مشکلات کا سامنا تھا۔

امریکا نے خبردار کیا تھا کہ ایران سے تجارتی تعلقات قائم رکھنے والے مملک کو سخت نتائج کا سامنا کرنا پڑے گا تاہم معاہدے میں شامل دیگر ممالک نے کہا کہ وہ اپنی کمپنیوں کے تحفظ کے لیے امریکا کی پابندیوں سے بچانے کے لیے کام کریں گے‘۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نوٹ: مبصر ڈاٹ کام ۔۔۔ کا کسی بھی خبر سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔ اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔ علاوہ ازیں آپ بھی اپنا کالم، بلاگ، مضمون یا کوئی خبر info@mubassir.com پر ای میل کر سکتے ہیں۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  2259
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
ٹرمپ انتظامیہ نے خاموشی کے ساتھ پاکستانی افسران سے قطع تعلق کرتے ہوئے ایسے متعدد باہمی تربیتی اور تعلیمی منصوبوں کو ختم کردیا جو گزشتہ ایک دہائی سے بھی زائد عرصے سے دونوں ممالک کے درمیان مضبوط عسکری تعلقات کی بنیاد تھے۔
گوئٹے مالا کے صدر جمی موریلس نے اسرائیل میں موجود اپنے سفارتخانے کو یروشلم منتقل کرنے کاحکم دیا ہے۔ انہوں نے یہ فیصلہ اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو سے بات کرنے کے بعد کیا۔
حکام کا کہنا ہے کہ طوفان ٹیمبن کے باعث درجنوں افراد ہلاک اور متعدد لاپتا ہوگئے، طوفان سے شدید بارشیں،سیلاب،مٹی کے تودے گرنے کے واقعات ہوئے جن کے باعث ہلاکتوں میں اضافہ ہوا۔
اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کیے جانے کے فیصلے کے خلاف قرارداد بھاری اکثریت سے منظور کر لی گئی۔ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں 193 ممبران ممالک نے مقبوضہ بیت

مزید خبریں
پال ریان نے امریکی ایوان نمائندگان کے اسپیکر کا عہدہ سنبھال لیا اور امریکا کی تاریخ کے سب سے کم عمر اسپیکر بن گئے۔ پال ریان نے ایوان نمائندگان میں اپنے عہدے کا حلف اٹھایا جس کے بعد سابق اسپیکر نینسی پلوسی نے انھیں روایتی موگری پیش کی
عراق میں یزیدی فرقے کے گم شدہ افراد اور داعش کے ہاتھوں یرغمال افراد کی تلاش میں سرگرم ادارے کی جانب سے بتایا گیا ہے دولت اسلامی’’داعش‘‘ کے ہاں اب بھی یزیدی فرقے کی تین ہزار خواتین قید ہیں۔ میڈیا کے مطابق عراق کی دھوک گورنری
کیتھولک عیسائیوں کے پیشوا پوپ فرانسس نے پادریوں کی جانب سے بچوں سے زیادتی پر معذرت کی ہے،انہوں نے واقعات کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ ،چرچ بچوں کے تحفظ کیلئے زیادہ سخت اقدامات کرے۔
موجودہ صدر حامد کرزئی دو مرتبہ صدر منتخب ہو چکے ہیں اور آئینی تقاضوں کے مطابق تیسری مرتبہ امیدوار نہیں ہو سکتے تھے۔ طالبان نے کئی ہفتے پہلے ہی اعلان کر دیا تھا کہ افغان شہری انتخابی مراکز کا رخ نہ کریں اور انتخابی عمل کو ناکام بنانے کے لیے بھرپور حملے کیے جائیں گے۔

مقبول ترین
سپریم کورٹ نے دیامر بھاشا اور مہمند ڈیم فنڈ کا نام تبدیل کرنے کی منظوری دے دی۔ چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں دادو سندھ میں نائی گچ ڈیم کی تعمیر سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران دیامربھاشا اور مہمند ڈیم فنڈ اکاونٹ کا ٹائٹل
گوگل نے اس بات کی تصدیق امریکی قانون دانوں کو لکھے گئے ایک خط میں کی ہے جس میں گوگل نے وضاحت کی ہے کہ تھرڈ پارٹی ڈیولپرز جی میل اکاؤنٹس تک رسائی اور شئیرنگ کی صلاحیت رکھتے ہیں۔
چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں جسٹس عمر عطا بندیال اور جسٹس اعجازالاحسن پر مشتمل سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے آج دانیال چوہدری کی درخواست پر سماعت کی۔
جے آئی ٹی سربراہ احسان صادق نے بتایا کہ مزید 33 مشکوک اکاؤنٹس کا سراغ لگایا ہے جن کی چھان بین جاری ہے، اب تک کی تحقیقات میں 334 افراد کے ملوث ہونے کا پتہ چلا ہے، یہ تمام ملزمان جعلی اکاؤنٹس میں ٹرانزیکشنر کرتے رہے

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں