Monday, 06 July, 2020
دولت اسلامیہ کے پاس امریکی اورسعودی اسلحہ ہے، برطانوی تھنک ٹینک

دولت اسلامیہ کے پاس امریکی اورسعودی اسلحہ ہے، برطانوی تھنک ٹینک

لندن ۔ ایک برطانوی تھنک ٹینک کا کہنا ہے کہ امریکہ اورسعودی عرب کی جانب سے شام میں حکومت مخالف مسلح گروہوں کو فراہم کیا جانے والا اسلحہ عموماً شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ کے ہاتھوں میں گیا۔

اسحلے اور ہتھیاروں کی نقل و حرکت پر نظر رکھنے والی تنظیم ’کنفلکٹ آرمامنٹ ریسرچ‘ (سی اے آر) کا دعویٰ ہے کہ دولت اسلامیہ کے پاس بیشتر اسلحہ شامی اور عراقی فوجیوں سے لوٹا ہوا ہے۔ لیکن کچھ اسلحہ خاص طور پر دیگر ممالک جیسے کہ امریکہ اور سعودی عرب نے شام میں صدر بشار الاسد کے خلاف محاذ آرا حزب اختلاف کے گروہوں کو فراہم کیا تھا۔

خبررساں ادارے روئٹرز کے مطابق تھنک ٹینک کی جانب سے جاری کردہ 200 صفحات کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ’یہ انکشافات تنازعات میں مختلف غیرریاستی عناصر کے درمیان لڑائی اور ایک دوسرے پر قابو پانے کی جنگ میں اسلحے کی فراہمی کے تضادات ظاہر کرتے ہیں۔‘

سی اے آر نے کم از کم 12 ایسے معاملات کی نشاندہی کی ہے جس میں امریکہ سے خریدا گیا اسلحہ دولت اسلامیہ کے ہاتھوں میں پہنچ گیا تھا۔ یہ اسلحہ لڑائی کے دوران حاصل کیا گیا یا شامی حزب اختلاف میں اتحادوں کے تبدیل ہونے کی وجہ سے ہوا۔ تنظیم کے مطابق ایسا بیشتر اسلحہ بعد میں عراق پہنچا۔

ایک معاملے میں امریکہ کی جانب سے ایک یورپی ملک سے گائیڈڈ ٹینک میزائل خریدے گئے۔ یہ میزائل شامی حکومت مخالف گروپ کو فراہم کیے گئے لیکن محض دو ماہ میں یہ میزائل دولت اسلامیہ کے جنگجوؤں کے پاس پہنچ گئے۔

تمام اسلحہ یورپی یونین ممالک میں تیار کردہ تھا اور بیشتر معاملات میں امریکہ نے شامی باغیوں کو یہ اسلحہ فراہم کر کے خریداری کے وقت کیے گئے معاہدوں کی خلاف ورزی کی۔

سی اے آر کی جانب سے اکٹھے کیے گئے شواہد سے ظاہر ہوتا ہے کہ امریکہ نے یورپی یونین میں تیار کردہ اسلحہ اور ہتھیار تسلسل سے شامی حکومت مخالف قوتوں کو فراہم کیے۔

اس تھنک ٹینک کا دعویٰ ہے کہ دولت اسلامیہ نے تیزی سے ان پر واضح تعداد میں قابو پایا۔

سی اے آر کا کہنا ہے کہ اسی طرح دولت اسلامیہ کے زیراستعمال کئی ایسی اشیا کی نشاندہی ہوئی ہے جنھیں سعودی عرب نے کسی دوسرے ملک کو منتقلی نہ کرنے کی شرط پر حاصل کیے تھے۔

تھنک ٹینک کے مطابق شام اور عراق میں دولت اسلامیہ کے زیراستعمال 90 فیصد اسلحہ اور ہتھیار چین، روس اور مشرقی یورپی ممالک کے تیار کردہ تھے جبکہ ان میں سے 50 فیصد چین اور روسی ساختہ تھے۔

رپورٹ کے مطابق یہ انکشافات ان قیاس آرائیوں کو تقویت دیتے ہیں کہ یہ فوجی ساز و سامان ابتدائی طور پر دولت اسلامیہ نے عراقی اور شامی افواج سے قبضے میں لیا تھا۔

سی اے آر کے مطابق ’شام میں دولت اسلامیہ کے زیراستعمال روسی ساختہ ہتھیاروں کی تعداد چینی ساختہ ہتھیاروں سے کہیں زیادہ تھی‘ جو بظاہر شامی حکومت کو روس کی جانب سے ہتھیاروں کی فراہمی ظاہر کرتی ہے۔

واضح رہے کہ گذشتہ ہفتے عراقی وزيراعظم حيدرالعبادی نے اعلان کيا تھا کہ عراقی افواج نے شدت پسند تنظیم دولتِ اسلاميہ تنظيم کے خلاف جنگ ميں مکمل فتح حاصل کرلی ہے۔

سنہ 2014 ميں اِس شدت پسند گروہ نے موصل، رقہ اور کئی دوسرے شہروں پر قابض ہونے کے بعد اپنی خلافت کا اعلان کرديا تھا۔ عراق اور شام ميں دولتِ اسلاميہ کے زيرقبضہ علاقوں ميں تقريباً ايک کروڑ لوگ آباد تھے۔

اپنا تبصرہ دینے کے لیے نیچے فارم پر کریں
   
نام
ای میل
تبصرہ
  53159
کوڈ
 
   
متعلقہ خبریں
عالمی ادارہ صحت نے دنیا بھر کے عوام کو خوش خبری دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس سال کے آخر تک کورونا کی ویکسین تیار ہو جائے گی۔ ڈاکٹر سوامی ناتھن کا کہنا تھا کہ انسداد ملیریا دوا ہائیڈروکسی کلوروکین کورونا وائرس انفیکشن کے علاج میں مفید نہیں ہے۔
وینیزویلا کے وزیر خارجہ خورخے اریزا (Jorge Arreaza) نے امریکی پابندیوں کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ آئل ٹینکروں کے وینزنیلا میں داخلے سے متعلق امریکی اقدامات پوری قوم پر حملہ ہیں۔ تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ وینزویلا نے تیل لوڈ کرنے کے لئے آئل ٹینکروں کے وینزویلا میں داخلے پر پابندی سے متعلق امریکی اقدام کو
امریکی جرنیلوں نے صدر ٹرمپ کے کہنے پر فوج کو مظاہرین کے خلاف استعمال کرنے سے انکار کر دیا ہے۔امریکی صدر ٹرمپ اپنے موقف سے پسپا ہونے پر مجبور ہوگئے، واشنگٹن کے باہر تعینات فوجی واپس شمالی کیرولائنا بھیج دیے گئے۔
سعودی حکومت نے ملک بھر سے مرحلہ وار کرفیو اٹھانے کا اعلان کر دیا، تاہم مکہ مکرمہ یہ پابندی برقرار رہے گی۔سعودی عرب میں حکام نے31 مئی کے بعد مساجدکو کھولنے اور سرکاری و نجی دفاتر میں کام کاج کی اجازت دینے کے علاوہ 21 جون کے بعد سے مکہ کو چھوڑ کر پورے ملک سے کرفیو ہٹانے کا اعلان کیا ہے۔

مزید خبریں
چینی دفترخارجہ کے ترجمان گینگ شوانگ نے ہفتہ وار پریس کانفرنس کے دوران سوالوں کے جوابات دیتے ہوئے کہا کہ مسئلہ کشمیر ایک تاریخی مسئلہ ہے جسے اقوام متحدہ کے چارٹر اور سلامتی کونسل کی متعلقہ قراردادوں کی روشنی میں پر امن طریقے

مقبول ترین
عراق میں امریکی سفارت خانے اور فوجی تنصیبات پر راکٹ داغے گئے تاہم امریکی ایئر ڈیفنس نے راکٹس کو فضا میں ہی ناکارہ بنا دیا۔ عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق عراق کے ریڈ زون ایریا میں واقع امریکی سفارت خانے پر ایک راکٹ داغا گیا جسے
اسلام آباد میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے زلفی بخاری کا کہنا تھا کہ پاکستان ٹوورازم ڈویلپمنٹ کارپوریشن (پی ٹی ڈی سی) بند نہیں ہوا بلکہ فائدہ مند ادارہ بننے جا رہا ہے۔ اس ادارے نے لاکھوں نوکریاں پیدا کرنی ہیں، ہمیں مشکل فیصلے کرنا ہوں گے۔
سی پیک اتھارٹی کے چیئرمین اور اطلاعات ونشریات کے معاون خصوصی لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ ایم ایٹ پر کام کا آغاز حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ سینٹرل ڈیویلپمنٹ ورکنگ پارٹی نے
آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی فوج نے جنگ معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے کنٹرول لائن پر بھاری ہتھیاروں سے فائرنگ کی، بٹل سیکٹر میں مارٹروں کی شیلنگ کر کے شہری آبادی کو نشانہ بنایا جس کی زد میں آ کر ایک 22 سالہ نوجوان زخمی ہو گیا۔

پاکستان
 
آر ایس ایس
ہمارے پارٹنر
ضرور پڑھیں
ریڈرز سروس
شعر و ادب
مقامی خبریں
آڈیو
شہر شہر کی خبریں